جمیعت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کی چیخیں، الیکشن 2018 کے خاتمے پہ تمام سیٹوں سے ہارنے کے بعد شروع ہوئیں۔ اور اب تک جاری ہیں۔ کیونکہ سابقہ حکومتوں کی تقلید کے برعکس، وزیراعظم عمران خان نے فضل الرحمن کو گود لینے سے صریحا انکار کر دیا۔

Video Credit: Spotlight Youtube channel.

جہاں کرسی جانے، حکومت میں نہ ہونے، لاکھوں کی لسی نہ ملنے اور سرکاری عیاشیاں چھن جانے کا دکھ، فضل الرحمن کو چین سے نہیں بیٹھنے دے رہا۔ وہیں اور بھی بہت ساری وجوہات ہیں، جن میں ایک وجہ تو یہ ہے کہ مدرسوں سے حاصل ہونے والی کروڑوں کی کمائی، عمران خان کسی بھی وقت چھین سکتے ہیں۔ مزید دیکھیں؛ دھرنا موخر کرنے کیلئے مولانا فضل الرحمن نے کیا مطالبات کیے۔

اس سب کے علاوہ، فضل الرحمن کے جو حامی دھڑلے سے کہتے ہیں کہ ہمارے قائد پہ ایک روپے کی کرپشن کا الزام نہیں۔ ان کا بھرم بھی ٹوٹ سکتا ہے۔ وہ کس طرح، اس کی مکمل تفصیل اوپر ویڈیو میں دیکھیں۔

Your Comments Will help Us to Improve.