نجی ٹی وی چینل سے وابستہ رپورٹر نے دعویٰ کیا ہے کہ مسلم لیگ ن کا کوئی بھی رہنما لاہور میں مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ میں شریک نہیں ہوا اور نہ ہی کسی نے ان کا فون اٹھایا، اس پر دلبرداشتہ ہو کر مولانا نے اپنے ایک ساتھی سے کہا۔ دل کرتا ہے ن لیگ کو گالیاں دوں۔

صحافی انعام اللہ خٹک نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ’ کل مولانا صاحب لاہور میں اسٹیج پر شہباز شریف اور دیگر لیگی قیادت کا انتظار کرتے رہے۔ دلبرداشتہ ہو کر سینیٹر طلحہ محمود کو کہا کہ ن لیگ لاہور کے صدر پرویز ملک کو فون کریں، کسی نے فون نہیں اٹھایا، مولانا نے مایوس ہو کر اپنے پارٹی کے دوست کو کہا کہ دل کرتا ہے ن لیگ کو گالیاں دوں۔‘

صحافی انعام اللہ خٹک نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ ’اپوزیشن نے پہلے حاصل بزنجو کو چیئرمین سینیٹ کے خواب دیکھا کر شرمندہ کر دیا، پھر مولانا صاحب کو آگے کرا کر اپنی ضمانتیں پکی کر لیں، اب مولانا کو لاہور اور جی ٹی روڈ پر اکیلا چھوڑ دیا، مولانا کے ساتھ انصارالاسلام کے علاوہ کوئی نہیں۔‘

Also, Watch Toyota Fortuner ALD-789 video scandal.

Your Comments Will help Us to Improve.