Video: Senior Superintendent Police (SSP) Shikarpur, Dr Rizwan Ahmed says his life is in danger from Provincial minister Saeed Ghani and Imtiaz Sheikh.

ایس ایس پی شکارپور ڈاکٹر رضوان احمد نے خود اور دیگر پولیس افسران پر پیپلز پارٹی کے صوبائی وزیروں کی طرف سے حملوں کا خدشہ ظاہر کر دیا۔ کچے کے ڈاکوؤں کو سیاست دانوں کی پشت پناہی حاصل ہے، حملوں کا خطرہ ہے ایس ایس پی شکار پور ڈاکٹر رضوان۔

SSP Shikarpur, Dr Rizwan

ایس ایس پی شکارپور ڈاکٹر رضوان کی جانب سے آئی جی سندھ کلیم امام کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ سندھ کے وزراء امتیاز شیخ اور سعید غنی سے خطرات لاحق ہیں۔

مزید دیکھیں: میلانیا ٹرمپ نے بھارت میں سبز و سفید رنگ کا لباس پہن کر مودی کا مذاق اڑایا، بھارتیوں کا نیا رونا۔

ڈاکٹر رضوان احمد نے اپنے خط میں مزید لکھا کہ مذکورہ بالا سیاستدانوں کے بیانات کے بعد کچے کے ڈاکو حملوں کی دھمکیاں دے رہے ہیں کیونکہ ڈاکوؤں کو سیاستدانوں کی حمایت حاصل ہے۔

خیال رہے کہ جنوری 2020 میں ایس ایس پی شکار پور کی جانب سے ایک رپورٹ سامنے آئی تھی جس میں الزام عائد کیا گیا تھا کہ صوبائی وزیر امتیاز شیخ جرائم پیشہ افراد کی سرپرستی کرتے ہیں۔

پولیس رپورٹ میں امتیاز شیخ کے بھائی مقبول شیخ اور بیٹے فراز شیخ کا جرائم پیشہ عناصر کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو کا ریکارڈ بھی شامل کیا گیا تھا۔

اس رپورٹ کے خلاف ایس ایس پی امتیاز شیخ نے عدالت میں جانے کا اعلان کیا تھا۔

ایس ایس پی امتیاز شیخ پر الزامات کے بعد اس وقت وزیر بلدیات سعید غنی نے بھی پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایس ایس پی ڈاکٹر رضوان کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

Your Comments Will help Us to Improve.