اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہاہے کہ ماضی میں سیاسی جماعتیں کہا کرتی تھی کہ اگر شفاف الیکشن کرواناہے تو فوج کی نگرانی میں کروایاجائے لیکن اب کہا جاہاہے کہ پولنگ سٹیشن کے اندر اور باہر فوج نہیں ہونی چاہئے بلکہ پولیس کی نگرانی میں الیکشن کروائے جائیں

۔ مزید دیکھیں، عمران خان دنیا کے سب سے زیادہ فالو کیے جانے والے بین الاقوامی لیڈرز کی دوڑ میں ۔

دنیا نیوز کے پروگرام”نقطہ نظر“میں گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ حکومت گرنے سے جونیا الیکشن ہوگا اس میں الیکشن کمیشن ان شکایات کا ازالہ کرسکتاہے ۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے الیکشن میں آئین وقانون میں اصلاحات کی گئی تھیں لیکن 2018کے الیکشن میں ان اصلاحات پر عمل نہیں کیا گیا ، ہم کو انتظامی قسم کی شکایات ہیں۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ کس قدر بدقسمتی کی بات ہے کہ ماضی میں سیاسی جماعتیں کہا کرتی تھی کہ اگر شفاف الیکشن کرواناہے تو فوج کی نگرانی میں کروایاجائے لیکن اب کہا جاہاہے کہ پولنگ سٹیشن کے اندر اور باہر فوج نہیں ہونی چاہئے۔ بلکہ پولیس کی نگرانی میں الیکشن کروائے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت چاہتی ہے کہ بازی کو اس طرح الٹا دیاجائے کہ حکومت جانے کی صورت میں اپوزیشن برسراقتدار نہ آئے بلکہ کو ئی غیرجمہوری قوت آجائے ۔

Your Comments Will help Us to Improve.